Library

Fakhruddin Ali Ahmed Research Library : – One of important aims and objective of Ghalib Institute was the establishment of a research library. A library within the Ghalib Institute was established and named Fakhruddin Ali Ahmed Research Library. With the addition of books and also in the case of scholars the library was shifted to large place on the first floor of the Ghalib Institute, is building which is equipped with the modern facilities. The library specializes in books, manuscripts about Ghalib and his era: and general books of Urdu language
and literature, of research and academics, including some rare and hand written books.
The library was gifted many fine books about Ghalib this year from Pakistan; a collection of important books from the collection of old trustee of Ghalib Institute, late Syed Muzaffar Husain Burney and from Prof. Nazir Ahmed and from Syeda Hameed. The library continues to receive important magazines and journals both from India and Pakistan. The Library continues to receive the prestigious journal ‘Makhzan’ from ‘Qaid-e-Azam Library’ Pakistan. Another famous magazine ‘Qaumi Zaban’ and magazine is also regularly received along with ‘Takhleeq’ and other popular literary magazines are also received. Computerised Cataloguing of books is rapidly moving on. The Library has now 20032 books.

فخر الدین علی احمد ریسرچ لائبریری

غالب انسٹی ٹیوٹ کی فخرالدین علی احمد ریسرچ لائبریری اپنے نادرونایاب کتابوں کے کلکشن، رسائل و جرائد و اہم مخطوطات کی وجہ سے علمی و ادبی دنیا میں اہم مقام کی حامل ہے۔ اس لائبریری میں ۲۵ ہزارسے زیادہ کتابیں موجود ہیں۔جن میں تقریباً ۱۰۰۰ سے 
  زیادہ کتابیں صرف غالبیات کے تعلق سے ہیں۔ اس کے علاوہ، عہدِ غالب، معاصیرنِ غالب، کلاسیکی ادب،اردووفارسی زبان و ادب، کے علاوہ عالمی ادب اور ہندوستان کی تاریخ و ثقافت پربھی اس لائبریری میں بڑی تعداد میں اہم کتابیں موجود ہیں۔ فارسی زبان و ادب کابڑا ذخیرہ بھی اس لائبریری میں آنے والے اسکالرز کے لئے توجہ کا مرکز ہے۔ غالب، مومن، میرتقی میر، سودا، انیس، دبیر، مرزا مظہرجانِ جاناں، تفتہ، قائم چاند پوری، ذوق، ظفر، اقبال، سردار جعفری، فیض کے علاوہ سعدی، خاقانی، رومی، فردوسی، انوری، بیدل، حافظ جیسے متعدد اردو فارسی کے عظیم شعراء کے دواوین بھی اس لائبریری کی زینت ہیں۔ اردو زبان و ادب کے ممتاز نقاد قاضی عبدالودود کی کتابوں کابڑا ذخیرہ بھی اس لائبریری میں موجود ہے۔ اس کے علاوہ اوربھی بڑے ادیبوں ،نقادوں اور محققوں کی کتابوں کا بڑا کلکشن یہاں موجود ہے۔فخرالدین علی احمد ریسرچ لائبریری کی خاص بات یہ بھی ہے کہ یہ لائبریری پوری طرح سے ایک ریسرچ لائبریری ہے۔ بڑی تعداد میں یونیورسٹی کے اساتذہ، ریسرچ اسکالرز اور ادیب و دانشور حضرات اس لائبریری سے فیض یاب ہوتے ہیں۔ ملک و بیرون ملک سے نکلنے والے اہم رسائل و جرائد بھی بڑی تعداد میں اس لائبریری میں برائے مطالعہ موجود رہتے ہیں۔اردو ادب کی تقریباً تمام اصناف کی کتابوں کی موجودگی نے اس لائبریری کی افادیت میں مزید اضافہ کیاہے۔ اپنی خوبصورتی، اور منفردو نایاب ذخائر کتب کی وجہ سے آج بھی فخرالدین علی احمد ریسرچ لائبریری پوری ادبی دنیا کے لئے سرمایۂ افتخار
ہے۔

Best libraries in Delhi – Must visits for every Bibliophile!

  1. The Ghalib Institute
http://aninception.com/education/best-libraries-in-delhi-must-visits-for-every-bibliophile