ڈاکٹر رضاحیدر ،غالب انسٹی ٹیوٹ کے نئے ڈائرکٹر

ستمبر ٢٠١٣ 

غالب انسٹی ٹیوٹ کے سکریٹری پروفیسر صدیق الرحمن قدوائی اور ادارے کے اہم ممبران نے اتفاق راے سے نوجوان اسکالر ڈاکٹر رضاحیدرکواُن کی محنت، صلاحیت اور لیاقت کو دیکھتے ہوئے غالب انسٹی ٹیوٹ کا نیا ڈائرکٹر منتخب کیاہے۔

دلّی یونیورسٹی سے پی۔ایچ۔ڈی کرنے کے بعد ڈاکٹر رضاحیدر نے غالب انسٹی ٹیوٹ جوائن کیاتھا،وہ ریسرچ آفیسر کے عہدے پر فائز تھے اور اب انہیں ترقی دے کر ڈائرکٹر کااہم منصب سونپا گیاہے۔

ڈاکٹر رضاحیدر کی مرتبہ کئی کتابیں منظرِ عام پر آچکی ہیں۔مختلف رسائل و جرائد میں بھی آپ کے مضامین برابر شائع ہوتے رہے ہیں۔دہلی کے علاوہ ہندستان کے مختلف گوشوں میں بھی آپ ادبی سرگرمیوں میں حصہ لیتے رہے ہیں۔ تصوف پر اُن کی لکھی ہوئی کتاب کو علمی حلقوں میں کافی پسند کیاگیاہے۔ حال ہی میں اُن کی پروفیسر صدیق الرحمن قدوائی اور شاہد ماہلی کے ساتھ غالب انسٹی ٹیوٹ کے ذریعے شائع ہوئی کتاب ’’غالب اور عہدِ غالب‘‘ تمام علمی حلقوں میں بے حد پسند کی جارہی ہے۔ اس خبرکو سُن کر علمی اور ادبی حلقوں میں کافی خوشی کااظہارکیا جارہاہے اور امید کی جارہی ہے کہ وہ غالب انسٹی ٹیوٹ کے ذریعے اردو زبان و ادب کے فروغ میں اہم رول ادا کریں گے۔ 

غالب انسٹی ٹیوٹ کے سابق ڈائرکٹر جناب شاہد ماہلی کو ادارے کا مشیرِ خاص مقرر کیاگیاہے۔


Dr. Syed Raza Haider Facebook

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے